چیک فراڈ کیس: ایک کروڑ کے کیس میں ضمانت نہیں ہوئی تو 4کروڑ میں کیسے دے دیں؟ سپریم کورٹ ،ملزم کی درخواست ضمانت خارج

اسلام آباد.سپریم کورٹ نے چیک فراڈ کیس کے ملزم کی درخواست ضمانت بعدازگرفتاری خارج کردی، عدالت نے کہاکہ ایک کروڑ کے کیس میں ضمانت نہیں ہوئی تو 4کروڑ میں کیسے دیں؟ ۔

نجی ٹی وی ہم نیوز کے مطابق سپریم کورٹ میں چیک فراڈ کیس کے ملزم کی درخواست پر سماعت ہوئی،جسٹس منظوراحمد ملک نے استفسار کیا کہ ملزم کب سے جیل میں ہے؟ ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد نے کہاکہ ملزم 18 نومبر سے جیل میں ہے، جسٹس منظور ملک نے کہاکہ یہ تو ساڑھے 3ماہ بنتے ہیں، آپ غلط بیانی کر رہے ہیں۔

وکیل مو¿کل کی حمایت کرے لیکن جج کے ساتھ دھوکہ نہ کرے،جسٹس منظور ملک نے استفسار کیاکہ ملزم پر کتنے روپے کے دھوکہ کا الزام ہے؟وکیل نے جواب دیتے ہوئے کہاکہ ملزم پر ساڑھے4 کروڑ روپے الزام ہے،جسٹس منظور ملک نے استفسار کیاکہ دوسرا کیس کتنے روپے کا ہے؟ وکیل درخواست گزار نے کہاکہ ملزم پر دوسرا کیس ایک کروڑ کا ہے، جسٹس منظور ملک نے کہاکہ ایک کروڑ کے کیس میں ضمانت نہیں ہوئی تو 4کروڑ میں کیسے دیں؟ عدالت نے کہاکہ کیس ٹرائل کورٹ میں ہے فیصلہ ہو جائے تو فریش گراو¿نڈز پر دوبارہ آ جائیں۔ عدالت نے ملزم کی درخواست ضمانت بعد از گرفتاری خارج کردی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں