بڑے عرب ملک میں جھڑپیں، 24 گھنٹے میں 90 افراد مارے گئے

صنعا . جنگ زدہ عرب ملک یمن میں حکومتی حمایت یافتہ ملیشیا اور ایرانی حمایت یافتہ حوثی باغیوں کے درمیان ہونے والی جھڑپوں میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 90 افراد مارے گئے۔
جھڑپیں شمالی یمن میں حکومتی حمایت یافتہ فورسز کے زیر قبضہ علاقے ماٰرب میں اس وقت شروع ہوئیں جب حوثی باغیوں نے گزشتہ ماہ یہاں حملہ کیا تھا۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ہونے والی جھڑپوں میں حکومتی فورسز کے 32 جبکہ حوثی باغیوں کے 58 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ حوثی باغیوں کی ہلاکتیں عرب اتحاد کے طیاروں کی بمباری کی وجہ سے ہوئی ہیں۔

عرب نیوز کے مطابق ماٰرب میں چھ اطراف میں جھڑپیں ہو رہی ہیں، پانچ جگہوں پر حکومتی فورسز مضبوطی کے ساتھ دفاع کر رہی ہیں تاہم کسارا کی طرف سے حوثی باغیوں کی پیش قدمی جاری ہے۔

اگر حوثی باغیوں نے اس علاقے کا قبضہ حاصل کرلیا تو یہ نہ صرف یمنی حکومت بلکہ عام شہریوں کیلئے بھی ہیجان کا باعث ہوگا کیونکہ اس کے اطراف کے صحرا میں بڑی خیمہ بستی قائم ہے جس میں لاکھوں بے گھر افراد نے پناہ لی ہوئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں